بیت المقدس کو اسرائیل کا درالحکومت بنانے کے اعلان پریوم احتجاج منانے کا اعلان

بیت المقدس کو اسرائیل کا درالحکومت بنانے کے اعلان پریوم احتجاج منانے کا اعلان

امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے پرشدید غم و غصہ کرتے ہوئے ملک بھر میں احتجاجی مظاہروں کا اعلا ن کیا ہے ۔مرکزی ترجمان نسیم کربلائی نے کہا امریکی صدر کے جارحانہ اعلان پر ہرگز خاموش نہیں بیٹھیں گے قبلہ اول کے دفاع کی خاطرکل جمعہ کو یوم دفاع بیت المقدس مناتے ہوئے ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں نکالی جائے گی اور امریکی صدر کے جارحانہ اعلان کے خلاف سخت احتجاج کیا جائے گا۔نسیم کربلائی کا کہنا تھا کہ عالم اسلام کے غیرت مند فرزندوں کو معلوم ہے کہ  ٹرمپ نے عالم اسلام و عرب کی غیرت کو للکارا ہے، عالم اسلام و عرب کو بھرپور ردعمل کا مظاہرہ کرنا چاہیے کیونکہ بیت المقدس مسلمانوں کا قبلہ اول ہے اور بیت المقدس فلسطین کا اٹوٹ حصہ ہے۔انہوںنے مزید کہا کہ یروشلم کا ایشو مسئلہ فلسطین کا ہی ایک حصہ ہے، اس لئے ٹرمپ کا اعلان درحقیقت فلسطین پر اسرائیل کے مکمل قبضے کو تسلیم کرنے کے مترداف ہے۔ اس خطے میں ناامنی کی سب سے بڑی وجہ اسرائیل خود ہے کہ جس نے ہزاروں فلسطینیوں کا قتل عام کیا۔

Share this post

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے