قبلہ اول میں نماز اور اذان پر پابندی سنگین جرم سے کم نہیں ،آئی ایس او پاکستان

قبلہ اول میں نماز اور اذان پر پابندی سنگین جرم سے کم نہیں ،آئی ایس او پاکستان

 قبلہ اول میں اذان  اور نماز پر اسرائیلی پابندی مذہبی شعائر پر حملہ ہے،انصر مہدی مرکزی جنرل سیکرٹری 
 امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان  کے مرکزی جنرل سیکرٹری انصر مہدی نے لاہور میں کارکنان سے عالمی حالات پر گفتگو میں اسرائیلی حکومت کی طرف سے مسجد اقصی میں نماز اور اذان پر پابندی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ قبلہ اول میں اذان دینے اور نماز ادا کرنے پر اسرائیلی پابندی مذہبی شعائر پر حملہ ہے۔ قبلہ اول مسلمانوں کے لیے مقدس عباست گاہ ہے کو فی الفور صہیونی قبضہ سے واگزار کیا جائے اورعالم اسلام میں جاری صہیونی سازشوں کا سدباب کرنے کے لیے مسلمان ریاستیں عوامی جذبات کی ترجمانی کرتے ہوئے مسئلہ پر اقدامات کریں۔مسلمان ریاستوں میں جاری مسائل جو امت مسلمہ کے اتحاد وحدت کو پارہ پارہ کرنے اور امت کے حقیقی مسائل یمن، مسئلہ کشمیر ، مسئلہ فلسطین سے توجہ ہٹانے کے لیے وضع کیے گئے ہیں کو فراموش کرتے ہوئے عالم اسلام اتحاد و حدت سے مسائل کو حل کریں مسلم دنیا کے حکمرانوں کو امریکی و اسرائیلی ناپاک عزائم کو سمجھنا ہوگا کہ امریکہ اور اس کی ناجائز اولاد اسرائیل یہی چاہتے ہیں کہ تمام مسلمان ممالک آپس میں گتھم گتھا ہو جائیں اور مسئلہ فلسطین کو فراموش کر دیں اور صیہونیوں کی اس سازش کو عملی جامہ پہنانے کے لئے بھی بدقسمتی سے مسلم دنیا کے حکمران ہی استعمال ہو رہے ہیں۔آئی ایس او کے مرکزی رہنماء نے کہا کہ قبلہ اول میں نماز اور اذان پر پابندی سنگین جرم سے کم نہیں۔ 

Share this post

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے