آئی ایس او کا کراچی میں مکتب تشیع کے علمی اثاثوں کے قتل پر گہری تشویش کا اظہار

آئی ایس او کا کراچی میں مکتب تشیع کے علمی اثاثوں کے قتل پر گہری تشویش کا اظہار

آئی ایس او کا کراچی میں مکتب تشیع کے علمی اثاثوں کے قتل پر گہری تشویش کا اظہار
کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے آئی ایس او کے ترجمان اکبر حسین نے کہا کہ بی بی اے کے سیکنڈ سمسٹر کے طالبعلم مرتضیٰ کا قتل سمیت دیگر شیعہ طلباء پر حملہ قابل مذمت ہے ٹارگٹ کا کلنگ کا واقعہ مکتب تشیع پاکستان کے علمی اثاثوں کا قتل ہے۔گزشتہ دو ماہ سے ٹارگٹ کلنگ کے واقعات ریاست اداروں کی ناکامی کا ثبوت ہیں ۔کراچی میں گزشتہ ماہ میں ہونے والے واقعات کی شفاف تفتیش کی جاتی تو ملت تشیع کے دانشورطبقہ کا قتل عام نہ ہوتا ۔اکبر حسین نے کہا کالعدم تنظیمیں کے خلاف ٹارگٹڈ آپریشن کیا جائے تاکہ مٹھی بھر تکفیری عناصر کا خاتمہ ممکن ہوسکے ۔انہوں نے مزید کہا کہ حکومتی دعووں کے باوجود دہشت گردی کے واقعات پر محب وطن پاکستانیوں کو تشویش لاحق ہے ۔

Share this post

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے